Masael Quetta

غزہ میں اسرائیلی فورسز کی وحشیانہ بمباری، 9 بچوں سمیت 24 فلسطینی شہید

1 798

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

مقبوضہ بیت المقدس(ویب ڈیسک)نہتے فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم میں شدت آگئی۔ غزہ میں اسرائیلی فورسز کی وحشیانہ بمباری سے 9 بچوں سمیت 24 فلسطینی شہید اور کئی زخمی ہوگئے۔میڈیارپورٹس کے مطابق بے رحم سرائیلی فورسز نے غز ہ پر فضائی بم برسا دیئے۔ بچوں سمیت متعدد افراد کو شہید کر دیا۔ صہیونی بمباری کے بعد غزہ میں رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔فلسطین کی مزاحمتی تنظیم حماس نے مسجد الاقصی کی بے حرمتی پر جوابی حملہ کیا۔ مقبوضہ بیت المقدس سے

- Advertisement -

سو کلومیٹر دور غزہ کی پٹی سے اسرائیل پر میزائل داغے، حملے کے خوف سے اسرائیلی پارلیمنٹ کو خالی کروالیا گیا۔حماس نے ٹینک شکن میزائل سے اسرائیلی فوج کی گاڑی بھی تباہ کر دی۔ حماس کے حملے کے خوف سے انتہا پسند یہودیوں کو مسجد الاقصی میں داخلے کا فیصلہ بھی ترک کرنا پڑا، مسجد الاقصی کے دروازے سے واپس لوٹ گئے۔ بعض صہیونی شہریوں نے مسجد الاقصی کے احاطے میں آگ لگا دی۔ انتہا پسند آگ کے مناظر دیکھ کر خوش ہوتے رہے۔ہزاروں اسرائیلی فوجیوں نے قبلہ اول پر دھاوا بولا، بے بس فلسطینیوں پر ظلم کا پہاڑ توڑ ڈالا، نمازیوں پر ربڑ کی کوٹنگ والی گولیاں برسائیں، شیلنگ کی

، بم بھی پھینکے، مسجد کے قالین کو بھی آگ لگ گئی۔ حملوں میں 300 سے زائد فلسطینی زخمی ہوگئے، کئی زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے۔اس کے باوجود فلسطینی جرات کی دیوار بن گئے۔ اسرائیلی مظالم کے آگے گھٹنے ٹیکنے سے انکار کر دیا۔ قابض فورسز پر پتھرا کیا اور آخری دم تک قبلہ اول کے تحفظ کا عزم بھی کیا۔ بے رحم اسرائیلیوں نے خواتین کو بھی نہ بخشا بے دردی سے گرفتار کیا۔ بہادر فلسطینی لڑکی ہتھکڑیاں لگتے ہوئے مسکراتی رہی۔ مسجد الاقصی کے باہر یہودی شہری نے فلسطینیوں پر گاڑی چڑھا دی

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.