Masael Quetta

مبینہ قاتلانہ حملے کی کوشش، مفتی تقی عثمانی کا بھی موقف سامنے آ گیا

0 432

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کراچی(ویب ڈیسک)ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی کا مبینہ قاتلانہ حملے کے بعد موقف سامنے آیا ہے انہوں نے آج پیش آنے والے واقعے کی تصدیق کر دی۔تفصیلات کے مطابق عالم دین مفتی عثمانی پر آج فجر کی نماز کے بعد حملے کی کوشش کی گئی تھی۔مفتی تقی عثمانی نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ فجر کے بعد ایک شخص میرے پاس آیا۔اس نے

- Advertisement -

علیحدگی میں بات کرنے کی درخواست کی۔قریب گیا ہی تھا کہ مشتبہ شخص نے چاقو نکال لیا، مجھے کوئی نقصان نہیں پہنچا،ساتھیوں نے مشکوک شخص کوپکڑ لیا۔انہوں نے مزید کہا کہ متعلقہ ادارے مزید تفتیش کر رہے ہیں اس کے بعد صورتحال واضح ہو گی۔واضح رہے کہ کچھ دیر قبل خبر آئی تھی ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے۔

بتایا گیا کہ ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملہ کیا گیا ہے۔خوشی قسمتی سے مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے تاہم بعد ازاں ایس ایس پی کورنگی نے کہا کہ ہ فجر کی نماز میں ایک شخص مفتی تقی عثمانی سے ملنے کی کوشش کی تھی جب گارڈ نے تلاشی لی تو ملاقات کے خواہشمند شخص سے چاقو برآمد ہوا

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.