Masael Quetta

طالبان نے پاک افغان تجارت پر کسٹم ڈیوٹی عائد کردی

افغان حکومت پہلے ہی ٹیکس لے رہی ہے

0 259

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

(مسائل نیوز ڈیسک )

- Advertisement -

افغان طالبان نے بھی تجارتی اشیاء کیلئے کسٹم ٹیرف جاری کردیا، جس سے تاجروں کو دوہرا ٹیکس دینا پڑے گا۔افغان طالبان کی جانب سے پاکستان سے تجارتی اشیاء کی آمد و رفت کیلئے باقاعدہ کسٹم ٹیرف جاری کئے جانے پر تاجروں کا کہنا ہے کہ افغان حکومت پہلے ہی ٹیکس لے رہی ہے، اب افغان طالبان کی جانب سے بھی ٹیکس وصولی سے لاگت بڑھ جائے گی اور دونوں ملکوں میں تجارتی سرگرمیاں متاثر ہوں گی۔

بعض تاجروں کا خیال ہے کہ طالبان کی جانب سے جو ٹیکس لگایا گیا ہے وہ بہت زیادہ نہیں،
پاک افغان چمن اور اسپن بولدک سرحدوں پر دونوں ممالک کے مابین کسٹم قوانین اور سسٹم کے حوالے سے پیچیدگیاں سامنے آرہی تھیں اور دونوں ممالک میں تجارت معطل ہوگئی تھی۔ اب افغان طالبان کی جانب سے 20 صفحات پر مشتمل کسٹم ٹیرف جاری کیا گیا ہے۔ ٹیرف ڈاکیومنٹ کے مطابق 376 اشیاء کی آمد و رفت پر ٹیکس لیا جائے گا، ان اشیاء میں کرین، ایسکیویٹر، الیکٹرانکس آئٹمز، جانور، ادویات، عام استعمال اور کھانے پینے کی اشیاء شامل ہیں، جس پر ٹیکس کی شرح تعداد اور ٹن کے حساب سے مقرر کی گئی ہے۔فیڈریشن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز اور چمن چیمبر آف کامرس کے سابق صدر انجینئر دارو خان اچکزئی کا کہنا ہے کہ افغانستان میں ڈبل ٹیکس غیر اعلانیہ طور پر کافی عرصے سے لیا جارہا ہے، خاص طور پر ایران سے آنے والے سامان پر افغان حکومت بھی ٹیکس لیتی تھی اور طالبان بھی، لیکن اب باضابطہ طالبان کی جانب سے ٹیکس لگایا گیا ہے–

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.